Parallel Universe: دُوسری دُنیا

اب کے ایسا ہے
کہ منزل کو سراغ نہیں ملتا
ان قدموں کا
جنہیں اس کے حج پہ آنا تھا
اسکے پتھر دل کو بوسہ دینا تھا
اسکے خار پہ ننگے پیر چلنا تھا
اور اسکے بُت پہ
رُوح کے ٹکڑے نچھاور کرنا تھے
کچھ ایسا ہوا ہے کہ
سفر جادواں ہو گیا ہے
اور منزل فنا فی السفر میں
اپنا زائر کھوجتی ہے

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s