سپردگی

تفصیل سے، بنا ترمیم کے

چھو لوں، چوم لوں پردے

اپنے حسیں کے

لکھ دوں اُس کے نام

سارے سچ آسماں و زمیں کے

جُرعہ جُرعہ اتاروں خود میں

جُز جُز اس میں رواں ہو جاؤں

آغاز کے،اختتام کے 

حد کے، انتہا کے

جھمیلوں سے

جُدا رہوں

ترتیب کے، اختصار کے

ربط کے، روانی کے

سب سبق بُھلا رہوں

میں نہ سوچوں منزل

میں نہ جانوں رستہ

میں نہ چاہوں اُڑان

میں نہ مانگوں حلقہ

منہا کردوں گزشتہ حوالے 

منتشر کر دوں فکری پیمانے

لوٹ جاؤں اس میں

سمیٹ کر لے آؤں خود میں

تفصیل سے، بنا ترمیم کے

چھو لوں چوم لوں پردے

اپنے حسیں کے

لکھ دوں اُس کے نام

سارے سچ آسماں و زمیں کے



Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s