چوتھا بعد

‎میں تمھارے ساتھ
‎وہ آنسو رو سکتی ہوں

‎وہ آہیں کراہ سکتی ہوں

‎جو روح کے آئینے میں

‎درِ جسم سے جھانکتی ہیں

‎جو خاموش تازیانہ ہیں

‎ہجر کا ہرجانہ ہیں

‎میں تمھارے لیے

‎وہ حاشیے مٹا سکتی ہوں

‎وہ گرہیں کھول سکتی ہوں

‎جو وقت نے راستوں پر

‎نوکِ جبر سے کھینچیں

‎جو فیصلوں کے نطق میں

‎لکھی گئیں

‎جو درد رہیں جو دار ہوئیں

‎میں تمھارے ساتھ حجاب بانٹ سکتی ہوں

‎اور ظاہر جھٹلا سکتی ہوں

‎ میں تمھاری ہر حد تک جا سکتی ہوں 

‎میں تمھیں اپنا مرکز بنا سکتی ہوں

‎میں تمھارے لیے پھر سے

‎وجود پا سکتی ہوں

اور چاہو تو عدم تک آ سکتی ہوں 


Advertisements

6 thoughts on “چوتھا بعد

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s